100

سٹی مال پلازہ اراضی فراڈ کیس، غلام رسول خان چیئرمین عوامی احتساب پارٹی کی چیئرمین نیب کو درخواست

بہاول پور( ایم اقبال انجم سے ) سٹی مال پلازہ اراضی فراڈ کیس، غلام رسول خان چیئرمین عوامی احتساب پارٹی کی چیئرمین نیب کو درخواست تفصیل کے مطابق سٹی مال پلازہ حضرت خواجہ غلام فرید رحمت اللہ علیہ کی ملکیہ اراضی خورد بورددسکینڈل تفصیل کے مطابق سٹی مال پلازہ بہاول والی اراضی ریکارڈ کے مطابق نواب سر صادق محمد خان عباسی والئی ریاست بہاولپور نے اپنے روحانی پیشوااورمعلم ومرشد حضرت خواجہ غلام فرید رحمت اللہ علیہ ’’ حضرت صاحب چاچڑاں شریف ‘‘ کے نام پر فرید گیٹ روڈ پر کروڑوں روپے مالیت کی کمرشل اراضی بذریعہ انتقال منتقل کروائی تھی حضرت خواجہ غلام فرید رحمت اللہ علیہ سال 1901 میں چاچڑاں شریف میں وفات پا گئے تھے انہیں مٹھن کوٹ میں سپرد خاک کیاگیا جہاں انکا مزارمبارک ہے سال 1944 میں نواب آف بہاول پورنے اپنے مرشدومعلم کی محبت سے سرشار ہوکر تقریبا17 کنال کمرشل اراضی حضرت صاحب چاچڑاں شریف کے نام منتقل کروائی مگراسی روز جعل سازی دھوکہ دہی فراڈ اورمحکمہ مال کی ملی بھگت سے نیلام عام کاڈھونگ رچاکرمبینہ طورپر اللہ نوازخان افغان نے اپنے نام منتقل کروائی اوربعدازاں اپنی بیگم کے نام حبہ کردی گئی غلام رسول خان نے مبینہ طورپر کرپشن کے ٹھوس ثبوت کی روشنی میں بڑی دھواں دھار مہم شروع کی مگر انہیں کرپٹ مافیا نے پہلے خریدنے کی کوشش کی انکار پر سابق کمشنر ثاقب ظفر اور انٹی کرپشن حکام سے ساز باز کرکے پولیس کو بلیک میل کرتے ہوئے دہشت گردی کے جھوٹے مقدمات میں گرفتار کرواکر جیل بھجوا دیا گیا دہشت گردی کے مقدمات میں غلام رسول خان انکے بھائی لیاقت علی خان اور دو بیٹوں کو بھی نامزد کیا گیا تفتیشی آفیسر شیخ وسیم اسلم انسپکٹرنے جھوٹے مقدمات میں45یوم تک جسمانی ریمانڈ حاصل کیا جو ریاستی دہشت گردی کی بد ترین مثال ہے انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کی ہے کہ سٹی مال پلازہ اور ایک نجی بنک کی عمارت منہدم کرنے کا حکم فرمایا جائے کیونکہ معروف صوفی شاعر اور روحانی شخصیت حضرت خواجہ غلام فرید رحمت اللہ علیہ کے نام انتقال شدہ کروڑوں روپے مالیت کی کمرشل اراضی ٹرسٹ پراپرٹی ہے جو قانونی طور پر نہ تو نیلام عام کی جا سکتی ہے اور نہ ہی کسی کو منتقل کی جا سکتی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں